بلوچستان فوڈ اتھارٹی نے گندے و سیوریج کے پانی سے کاشت کی گئیں سبزیوں کے خلاف کریک ڈاﺅن کا سلسلہ جاری

0

کوئٹہ :-بلوچستان فوڈ اتھارٹی نے گندے و سیوریج کے پانی سے کاشت کی گئیں سبزیوں کے خلاف کریک ڈاﺅن کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے سمنگلی اور سپنی روڈ کے نواحی علاقوں میں وسیع اراضی پر پالک، پیاز اور گوبی سمیت مختلف سبزیوں کی زیر کاشت و تیار فصلیں تلف کردیں. فوڈ اتھارٹی حکام نے کارروائی کے دوران مزکورہ کھیتوں کو سیوریج کے پانی کی فراہمی کے ذرائع بھی منقطع کردیئے۔ڈائریکٹر جنرل بلوچستان فوڈ اتھارٹی ابراہیم بلوچ جو ذاتی طور پر مزکورہ آپریشن کی مسلسل نگرانی کر رہے ہیں کا کہنا ہے کہ کوئٹہ شہر اور اس سے ملحقہ علاقوں میں سیوریج کے گندے پانی سے سبزیوں کی کاشت ایک توجہ طلب مسئلہ ہے جسکے رجحان میں مسلسل اضافہ تشویشناک ہے، انہوں نے کہا کہ طبی ماہرین کے مطابق گندے پانی سے کاشت کی جانے والی سبزیوں کے استعمال سے لوگوں کی صحت متاثر ہو رہی ہے، جس کے تدارک کے لیے بلوچستان فوڈ اتھارٹی کی جانب سے گندے پانی سے کھیتوں کی سیرابی کو روکنے اور عوام کو محفوظ اور صحت افزا سبزیوں اور پھلوں کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لئے خصوصی کریک ڈاو¿ن کا فیصلہ کیا گیا اور تاحال مختلف مراحل میں کوئٹہ شہر کے متعدد علاقوں میں گندے پانی سے سینکڑوں ایکڑ اراضی پر کاشت کی گئی سبزیوں کو تلف کیا جا چکا ہے، ان کے مطابق جاری کریک ڈاو¿ن کو دیگر علاقوں تک وسعت دی جائے گی اور عوام کی صحت پر کسی صورت سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.