کلسٹربم کا استعمال انسانی حقوق کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے، وزیرخارجہ

کلسٹربم کا استعمال انسانی حقوق کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے، وزیرخارجہ

اسلام آباد(زیبائے پاکستان آئی این پی ) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ بھارت کلسٹربموں سے شہریوں اورنہتے افرادکونشانہ بنا رہا ہے،کشمیر میں بھارتی جارحیت اس کی بوکھلاہٹ کا ثبوت ہے،حالات کو جان بوجھ کر بگاڑا جارہا ہے،ہم چاہتے ہیں کہ امن وامان رہے،خطہ ایدونچرزم کا متحمل نہیں ہوسکتا،کلسٹربم کا استعمال انسانی حقوق کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے۔تفصیلات کے مطابق ایل او سی پر کلسٹر ٹوائے بم کے استعمال پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے ایک بیان میں کہا بھارت کلسٹربموں سے شہریوں اور نہتے افراد کونشانہ بنا رہا ہے، یہ اقدام انسانی حقوق کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے۔وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فوج کی نئی کمک بھجوائی جارہی ہے، راشن محفوظ کرنے کی باتیں کی جارہی ہیں، مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر سیکریٹری جنرل اقوام متحدہ کوخط لکھے ہیں۔شاہ محمود قریشی نے کہا افغانستان میں امن عمل نازک مرحلیمیں داخل ہوچکاہے، مجھے اس امن عمل میں مداخلت کاخدشہ تھااورہے، امریکا اور اقوام متحدہ کواس صورتحال پرخاموش نہیں رہناچاہیے۔ان کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں شہری اب مظالم کے خلاف کھڑا ہوگیا ہے، ٹرمپ نزاکت سمجھتے ہوئے ثالثی کی پیشکش کرتے ہیں، افغانستان سے مذاکرات ایک نازک مرحلیمیں داخل ہیں، خطے کے امن اواستحکام کے خلاف بڑی سازش دکھائی دے رہی ہے۔وزیر خارجہ نے کہا بھارت بوکھلاہٹ کا شکار ہے ، اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل کو ، کل بھی بھارتی مظالم پر خط لکھا ہے ، اقوام عالم کو بھارتی مظالم پر آواز بلند کرنا ہوگی ، کشمیر میں بھارتی جارحیت اس کی بوکھلاہٹ کا ثبوت ہے۔شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ ہمیں تشویش ہیکہ حالات کوجان بوجھ کربگاڑاجارہاہے، ہم چاہتیہیں کہ امن وامان رہے،خطہ ایدونچرزم کا متحمل نہیں ہوسکتا۔زلمے خلیل زاد کے دورہ پاکستان کے حوالے سے انھوں نے کہا کہ زلمے خلیل زاد کے دورے کا مینڈیٹ افغانستان میں امن ہے، زلمے خلیل کو افغان امن کو لاحق خطرات سے متعلق آگاہ کیا ہے۔وزیر خارجہ کا مزید کہنا تھا کہ آئندہ چنددن میں ایک اورامریکی وفدپاکستان آرہاہے، آنے والے امریکی وفد سے بھی اپنے خدشات کا اظہار کریں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں