وفاقی حکومت اسحاق ڈار کو پاکستان لانے کیلئے قانونی مشاورت کو حتمی شکل نہ دے سکی

وفاقی حکومت اسحاق ڈار کو پاکستان لانے کیلئے قانونی مشاورت کو حتمی شکل نہ دے سکی

اسلام آباد (زیبائے پاکستان آئی ا ین پی) وفاقی حکومت سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کو برطانیہ سے پاکستان لانے کے لئے قانونی مشاورت کو حتمی شکل نہ دے سکی‘ حکومت کو متعلقہ وزارتوں ‘ نیب اور ایف آئی اے کی طرف سے تجاویز کا انتظار ہے‘ قانونی مشاورت مکمل ہونے پر ہی سینیٹر اسحاق ڈار کی حوالگی سے متعلق برطانیہ سے معاہدہ کیا جائے گا۔ ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت نے سینیٹر اسحاق ڈار کو برطانیہ سے پاکستان لانے کے لئے برطانوی حکومت سے مفاہمتی یاداشت پر دستخط تو کرلئے تھے تاہم تاحال ملزم کی حوالگی سے متعلق معاہدہ نہ ہوسکا۔ وزارت خارجہ کے خط کی روشنی میں وزارت داخلہ نے نیب‘ ایف آئی اے اور وزارت قانون سے برطانیہ سے مجوزہ معاہدے پر قانونی مشاورت طلب کی تھی تاہم ڈیڑھ ماہ گزرنے کے باوجود تاحال کسی بھی وزارت یا ادارے کی طرف سے کوئی جواب نہیں آیا جس کی وجہ سے برطانیہ سے معاہدے میں تاخیر ہورہی ہے۔ ذرائع کے مطابق قانونی مشاورت مکمل ہونے پر ہی وزارت خارجہ کو برطانیہ سے ملزم کی حوالگی کے معاہدے کی اجازت دی جائے گی۔ واضح رہے کہ برطانیہ کے ساتھ ملزم کی حوالگی کا جو معاہدہ کیا جائے گا اس کا اطلاق صرف اور صرف سینیٹر اسحاق ڈار پر ہوگا۔ )

اپنا تبصرہ بھیجیں