یونانی جزیرے پر مہاجر کیمپ میں نوجوان افغان خاتون جل کر ہلاک

0

ایتھنز: یونانی جزیرے لیسبوس کے ایک مہاجر کیمپ میں ایک ستائیس سالہ افغان خاتون جل کر ہلاک ہو گئی۔ یہ خاتون تین بچوں کی ماں تھی اور اس کیمپ میں اس کنٹینر میں اچانک آگ لگی گئی تھی، جس میں وہ اپنے خاندان کے ساتھ رہائش پذیر تھی۔میڈیارپورٹس کے مطابق پولیس نے بتایا کہ جزیرے لیسبوس کی میتیلین نامی مرکزی بندرگاہ کے قریب کاراتیپے کے مہاجر کیمپ میں اس خاتون کی ایک کنٹینر میں بنی رہائش گاہ میں یہ آگ رات دو بجے لگی تھی۔پولیس نے بتایا کہ آگ لگنے کے بعد اس خاتون کا شوہر پہلے اپنے تین بچوں کو آگ کے شعلوں سے بچا کر جلتے ہوئے کنٹینر سے باہر نکال لینے میں کامیاب ہو گیا۔پھر جب اس نے اپنی بیوی کو بھی بچانے کی کوشش کی، تو اس دوران کنٹینر میں بھر جانے والے زہریلے دھوئیں کے سبب وہ خود بھی بے ہوش ہو گیا تھا۔ یہ آگ بظاہر اس وقت لگی، جب کنٹینر کو سردیوں میں گرم رکھنے کے لیے استعمال کی جانے والی گیس کی ایک بڑی بوتل دھماکے سے پھٹ گئی۔لیسبوس کے یونانی جزیرے پر کاراتیپے کے مہاجر کیمپ میں مجموعی طور پر پناہ کے متلاشی 1324 غیر ملکی رہتے ہیں۔ مقامی غیر حکومتی تنظیموں کے مطابق ان میں سے بہت سے تارکین وطن اور ان کے خاندانوں کو درپیش حالات انتہائی پریشان کن ہیں۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.