مقبوضہ کشمیر میں شہر خموشاں سا سناٹا، تیسرے روز بھی کرفیو، فوج پر پتھراؤ

مقبوضہ کشمیر میں شہر خموشاں سا سناٹا، تیسرے روز بھی کرفیو، فوج پر پتھراؤ

سری نگر(زیبائے پاکستان آن لائن) مقبوضہ کشمیر میں شہرخموشاں جیسے سناٹے کا راج ہے، تیسرے روز بھی کرفیو نافذ، انٹرنیٹ، موبائل، لینڈلائن فون تاحال بند ہیں۔ خاردار تاریں لگا کر سڑکیں بند کر دی گئیں، ہزاروں بھارتی فوجیوں کی تعیناتی سے وادی فوجی حصار میں ہے تاہم فورسز پر جگہ جگہ پتھراو جاری ہے۔مقبوضہ وادی میں تیسرے روز بھی کرفیو کا نافذ، کسی کو بھی باہر نکلنیکی اجازت نہیں۔ انٹرنیٹ، موبائل لینڈ لائن سمیت رابطے کے تمام ذرائع تاحال بند ہیں۔ خاردار تاریں اور ہزاروں بھارتی فوجیوں کی تعیناتی سے وادی کو بڑی جیل میں تبدیل کر دیا گیا۔لداخ میں نقل و حمل کے سارے ذرائع معطل ہیں، خوراک اور پانی کی تلاش میں باہر نکلنے پر لوگوں کو جگہ جگہ روکا جا رہا ہے، بارہ مولا میں فوج پر پتھراؤ کیا گیا۔پولیس کی گاڑیوں سے لگاتار یہ کا اعلان کیا جا رہا ہے کہ دو سے زیادہ لوگ نظرآنے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ برطانوی میڈیا کے مطابق مواصلاتی ذرائع منقطع ہونے کی وجہ سے بیشتر کشمیری آرٹیکل 370اے کے خاتمے سے لاعلم ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں