بلاول بھٹو زرداری کی مولانا فضل الرحمان اور شہباز شریف سے الگ الگ ملاقات

بلاول بھٹو زرداری کی مولانا فضل الرحمان اور شہباز شریف سے الگ الگ ملاقات

اسلام آباد(زیبائے پاکستان آئی این پی) پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان اور مسلم لیگ (ن)کے صدر شہباز شریف سے الگ الگ ملاقات کی ہے۔پیپلز پارٹی چیئرمین کی مولانا فضل الرحمان سے ملاقات میںمولانا اسعد محمود، مولانا عبدالغفور حیدری، اکرم خان درانی ،مولانا لطف الرحمان اور خورشید شاہ بھی ملاقات میں شریک ہوئے۔ملاقات میں مسئلہ کشمیر کی صورت حال کے علاوہ عوام کے جمہوری حقوق کی جدوجہد کے امور زیربحث آئے۔اس سے قبل چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے بدھ کی صبح شہباز شریف سے قومی اسمبلی میں ان کے چیمبر میں ملاقات کی ۔چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری شہباز شریف سے ملاقات کے بعد میڈیا سے بات چیت میں کہا کہ شہباز شریف کا شکرگزار ہوں کہ اچھا کھانا کھلایا اور اہم امور پر گفتگو کی، اپوزیشن جماعتوں کی یہ تجویز اچھی ہے کہ ہماری رہبر کمیٹی مسئلہ کشمیر پر بات کرے،ہر اپوزیشن جماعت کے پاس مہارت کے ساتھ اپنے دانشور اور امور خارجہ کے ماہرین ہیں۔انہوں نے کہا کہ اپوزیشن جماعتیں آپس میں مشاورت کریں گی کہ کیسے مسئلہ کشمیر کے حوالے سے اپنی اخلاقی اور سیاسی سپورٹ کوبڑھاسکیں،کشمیر کے شہری مودی کی وحشیانہ پالیسیوں کا سامنا کررہے ہیں۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ رہبر کمیٹی اپنی آئندہ ملاقات میں مسئلہ کشمیر کے حوالے سے تفصیل سے بات کرے گی۔ رہبر کمیٹی عوام کے معاشی، جمہوری اور انسانی حقوق کی جدوجہد کے حوالے سے لائحہ عمل پر بھی غور کرے گی۔چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ اپوزیشن عوام کے معاشی، جمہوری اور انسانی حقوق کی جدوجہد کے حوالے سے ایک ساتھ ہے،جب نئی آمریت میں آپ جمہوری سیاست کرتے ہیں تو غیرجمہوری قوتوں سے مقابلہ بھی کرنا پڑتا ہے۔انہوں نے کہا کہ غیرجمہوری قوتوں کا مقابلہ کرتے ہوئے یا تو آپ انہیں انتخابی شکست دیتے ہیں جو انتہائی مشکل ہوتا ہے،غیر جمہوری قوتوں کے مقابلے میں جیت کا دوسرا طریقہ یہ ہوتا ہے کہ آپ انہیں بے نقاب کردیں۔سمجھتا ہوں کہ سینیٹ الیکشن میں اپوزیشن نے پوری قوم کے سامنے غیرجمہوری حکومت کو بے نقاب کردیا ہے۔(رڈ)

اپنا تبصرہ بھیجیں