کرکٹ ٹیم کیلئے سینٹرل کنٹریکٹ جاری،شعیب ملک اور حفیظ محروم، عامر کی تنزلی کر دی گئی

کرکٹ ٹیم کیلئے سینٹرل کنٹریکٹ جاری،شعیب ملک اور حفیظ محروم، عامر کی تنزلی کر دی گئی

لاہور(زیبائے پاکستان آئی این پی) پاکستان کر کٹ بورڈ(پی سی بی )نے سنیئر کرکٹرز شعیب ملک اور محمد حفیظ کو سینٹرل کنٹریکٹ سے نکال دیا جبکہ سینئر فاسٹ بائولر محمد عامر کی کنٹریکٹ میں تنزلی کردی جس کے بعد دونوں کی کیرئیرز پر سوالات کھڑے ہو گئے ہیں۔پاکستان کرکٹ بورڈ نے سال 20-2019 کے لیے 19 کھلاڑیوں کو سینٹرل کنٹریکٹ دیا ہے جس میں کپتان سرفرازاحمد، بابر اعظم اور یاسر شاہ کو اے کٹیگری میں رکھا گیا ہے۔پی سی بی نے گذشتہ سال 33 کھلاڑیوں کو سینٹرل کنٹریکٹ دیے تھے مگر اس سال ان کی تعداد میں نمایاں کمی کرتے ہوئے صرف19کرکٹرز کو کنٹریکٹ دیا گیا ہے۔پی سی بی نے اظہر علی کو اے سے بی کٹیگری اور ٹیسٹ کرکٹ چھوڑنے والے محمد عامر کی تنزلی سی کیٹیگری میں کر دی ہے۔بورڈ نے نئے سنٹرل کنٹریکٹ میں شامل کھلاڑیوں کے معاوضوں میں نمایاں اضافہ کیا ہے۔کٹیگری اے میں سرفراز احمد، بابر اعظم اور یاسر شاہ شامل ہیں اور کٹیگری بی میں اسد شفیق، اظہر علی، حارث سہیل، امام الحق، محمد عباس، شاداب خان ، شاہین شاہ آفریدی اور وہاب ریاض شامل ہیں جب کہ کٹیگری سی میں عابد علی، حسن علی، فخر زمان، عماد وسیم، محمد عامر، محمد رضوان، شان مسعود اور عثمان شنواری کو رکھا گیا ہے۔نیا سنٹرل کنٹریکٹ یکم جولائی 2019 سے 30 جون 2020 تک نافذ العمل ہوگا۔گذشتہ 12 ماہ میں کھلاڑیوں کی فٹنس، کارکردگی اور آئندہ سیزن میں قومی کرکٹ ٹیم کی نمائندگی کو مدنظر رکھتے ہوئے نیا سنٹرل کنٹریکٹ جاری کیا گیا ہے۔پی سی بی کا کہنا ہے کہ دو سابق کپتانوں محمد حفیظ اور شعیب ملک کو سنٹرل کنٹریکٹ جاری نہیں کیا گیا تاہم دونوں کھلاڑی قومی کرکٹ ٹیم کی سلیکشن کے لیے دستیاب ہوں گے۔ایم ڈی وسیم خان کا کہنا ہے کہ ہم نے نئے سنٹرل کنٹریکٹ میں شامل کھلاڑیوں کے معاوضوں میں نمایاں اضافہ کیا گیا ہے۔وسیم خان کے مطابق پی سی بی نے آئندہ سیزن کے لیے بلند اہداف رکھے ہیں اور نے سنٹرل کنٹریکٹ کے حصول کے لیے معیار بلند کیا ہے۔ایم ڈی پی سی بی کا کہنا ہے کہ وہ پراعتماد ہیں کہ سینٹرل کنٹریکٹ میں شامل کھلاڑی اپنی کارکردگی سے بورڈ کو اپنے اہداف حاصل کرنے میں مدد دیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں