بلوچستان ہائیکورٹ نے عید الاضحی کی چھٹیوں کا اعلان کردیا

بلوچستان ہائیکورٹ نے عید الاضحی کی چھٹیوں کا اعلان کردیا

کوئٹہ (زیبائے پاکستان آئی این پی) بلوچستان نیشنل پارٹی کے مرکزی رہنمانوابزادہ حاجی میر لشکری خان رئیسانی نے کہا ہے کہ سانحہ 8 اگست سے متعلق عدالتی کمیشن کی رپورٹ پر عملدآمد کرایا جائے ۔ دہشتگردی کے پر اسرار واقعات میں ملوث عناصر کی عدم گرفتاری سے عوام اور ریاست کے درمیان بداعتمادی میں اضافہ ہورہا ہے۔ اپنے جاری بیان میں نوابزادہ لشکری رئیسانی نے سانحہ آٹھ اگست میں شہید ہونے والے وکلااور صحافیوں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ اس سانحے سے متعلق جسٹس قاضی فائز عیسی کی سربراہی میں قائم جوڈیشنل کمیشن کی انکوائری رپورٹ میں ذمہ داروں کا تعین ہونے کے باجود ریاستی نظام کو مخصوص طبقے کے مفادات کیلئے بروئے کار لاتے ہوئے سانحہ کے ذمہ داروں کیخلاف کارروائی عمل میں نہیں لائی جارہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں ہونے والے دہشتگردی کے سینکڑوں واقعات میںسے کسی ایک واقعہ کی بھی ہونے والی تحقیقات نتیجہ خیز ثابت نہیں ہوئی جو ریاستی نظام کی ناکامی کی عکاسی کرتاہے۔ انہوں نے کہا کہ پر اسرار دہشت گردی کے واقعات کی تحقیقات کرائی جائے تاکہ لوگوں کو پتہ چل سکے کے صوبے میں ہونے والی قتل وغارت گری کے پیچھے کس کا ہاتھ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پھر سے ایک مہذب سماج کی طرف لوٹنے کیلئے سیاسی جماعتوں ، طلباء، وکلاتنظیموں سمیت باشعور طبقہ کو اتحاد واتفاق کا مظاہرہ کرتے ہوئے ننگ وناموس کیلئے مشترکہ جدوجہد کی راہ اپناتے ہوئے بحران زدہ سماج کو ان بحرانوں سے نکالنے میں اپنا کردار ادا کر نا چاہیے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں