علامہ اقبال کے تصور اور افکار کو سمجھنے کی جتنی ضرورت آج ہے پہلے کبھی نہیں تھی: ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

علامہ اقبال کے تصور اور افکار کو سمجھنے کی جتنی ضرورت آج ہے پہلے کبھی نہیں تھی: ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

کوئٹہ08نومبر:۔ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی نے کہا ہے کہ علامہ اقبال کے تصور اور افکار کو سمجھنے کی جتنی ضرورت آج ہے پہلے کبھی نہیں تھی،وہ بیسوی صدی کے ایک عظیم شاعر،مصنف،قانون دان،فلاسفر، دانشور اور سیاستدان تھے اور ان کا شمار تحریک پاکستان کی اہم ترین شخصیات میں ہوتا ہے، علامہ اقبال کی فارسی اور اْردو شاعری میں بنیادی رجحان تصوف اور احیائے امت اسلام کی طرف تھا،ترجمان صوبائی حکومت لیاقت شاہوانی نے کہا کہ آج علامہ اقبال کا 142 واں ولادت نا صرف پاکستان بلکہ پْوری دنیا میں منایا جا رہا ہے کیونکہ ان کے اشعار و تصانیف پْوری دنیا کیلئے بہترین رہنمائی کا ذریعہ ہیں،بحثیت سیاست دان علامہ اقبال نے نظریہ پاکستان کی تشکیل 1930ء میں الہ آباد میں منعقدہ مسلم لیگ کے اجلاس میں کر دی تھی یہی نظریہ بعد پاکستان کے قیام کی بنیاد بنا،اسی وجہ سے علامہ اقبال کو پاکستان کا نظریاتی باپ سمجھا جاتاْ ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں