ریلوے کے پرانے ٹریکس ہونے کے سبب ہم مسائل کا سامنا کررہے ہیں،پارلیمانی سیکرٹری برائے ریلوے

0

 اسلام آباد (این این آئی)قومی اسمبلی کو بتایاگیا ہے کہ ریلوے کے پرانے ٹریکس ہونے کے سبب ہم مسائل کا سامنا کررہے ہیں،سی پیک کے تحت نیا ریلوے کا نظام لا رہے ہیں ،کراچی سے پشاور تک ڈبل ریلوے ٹریک بچھایا جا رہا ہے۔ بدھ کو وقفہ سوالات کے دور ان پارلیمانی سیکرٹری برائے ریلوے فرخ حبیب نے بتایاکہ کوئی بھی نہیں چاہتا کہ حادثات ہوں یا نقصان ہو۔ انہوںنے کہاکہ 1857 سے انگریزوں کے دور کا ریلوے نظام ہے۔ انہوںنے کہاکہ پرانے  ٹریکس ہونے کے سبب ہم مسائل کا سامنا کر رہے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ سی پیک کے تحت نیا ریلوے کا نظام لا رہے ہیں ،کراچی سے پشاور تک ڈبل ریلوے ٹریک بچھایا جا رہا ہے۔ انہوںنے کہاکہ حادثات میں جو ذمہ داران تھے ان کے خلاف ایکشن لیا جا چکا ہے۔ انہوںنے کہاکہ ہم کوشش کر رہے ہیں کہ حادثات میں کمی لا جا سکے۔ انہوںنے کہاکہ 2014 میں ریلوے میں سب سے زیادہ  حادثات ہوئے،ریلوے ہماری ریلوے ہے اس پر ہمیں سیاست نہیں کرنی چاہیے۔وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے بتایاکہ سپریم کورٹ کا حکم ہے کہ ہر حال میں کے سی آر چلائی جائے ،کے یو ٹی سی میں ساٹھ پرسنٹ ہمارا شیئر ہے اور چالیس پرسنٹ صوبہ سندھ کا شیئر ہے ،ہم نے وزیر اعلی سندھ کو کہا ہے کہ سارا منصوبہ آپ خود بنائیں۔ انہوںنے کہاکہ سپریم کورٹ نے حکم دیا ہے کہ چھ مہینے میں سندھ گورنمنٹ میں اس کے برجز اور انڈر پاسز بنائیںاور ہمیں کہا کہ ریل چلائیں،جنہوں نے اونے پونے داموں ریلوے کی زمین لٹائی اس میں ریلوے کے ملازمین بھی شامل ہیں،ہم زمین دینے کے لئے تیار ہیں۔ انہوںنے کہاکہ اس وقت ہمارے پاس پنشن کے پیسے دینے کے بھی پیسے نہیں،ہم چھ مہینے میں کے سی آر چلائیں گے،کے سی آر کی زمین پر سب ناجائز گھر ہیں۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.