امریکا، یہود مخالف حملوں میں ریکارڈ اضافہ

0

نیویارک:  امریکا میں یہود مخالف حملوں میں ریکارڈ اضافہ دیکھنے میں آیا جن میں جسمانی حملے شامل ہیں۔بین الاقوامی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق اینٹی ڈیفیمیشن لیگ(اے ڈی ایل)نے اپنی سالانہ رپوٹ میں بتایا کہ 2019 میں امریکا میں یہودیوں کے خلاف 2 ہزار ایک سو 7 حملے ریکارڈ کیے گئے جو 1979 میں اس حوالے سے ریکارڈ رکھے جانے کے آغاز کے بعد سے سب سے زیادہ ہے۔اے ڈی ایل کے چیف ایگزیکٹو افسر(سی ای او)جوناتھن گرین بلاٹ نے ایک بیان میں یہ وہ سال تھا جب غیرمعمولی یہود مخالف سرگرمی دیکھی گئی، ایسے وقت میں ملک میں اکثر یہودیوں کو براہ راست نفرت انگیز حملوں کا سامان ہوا۔انہوں نے کہا کہ ایسے حملوں کے باعث ہماری برداریوں میں خوف و ہراس کی فضا میں اضافہ ہوا۔آڈٹ کے مطابق یہود مخالف حملوں میں 12 فیصد اضافہ ہوا جب ایک ہزار 8 سو 79 حملے ہوئے تھے۔رپورٹ کے مطابق گزشتہ سال 2017 کے مقابلے میں بدتر تھا جب ایک ہزار 9 سو86 یہود مخالف حملے ریکارڈ کیے گئے تھے ۔یہودیوں کے خلاف ہائی پروفائل حملوں میں گزشتہ برس اپریل میں یہودی عبادت گاہ میں حملہ، اسی برس دسمبر میں نیوجرسی میں گروسری اسٹور میں فائرنگ کی گئی اور اسی ماہ نیویارک میں یہودی ربی کے گھر پر چاقو سے حملہ کیا گیا تھا۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.