شمالی وزیرستان میں غیرت کے نام پر کمسن لڑکیوں کو قتل کرنے والے د و ملزمان گرفتار کر لئے گئے

0

شمالی وزیرستان: شمالی وزیرستان کے علاقے گڑیوم میں غیرت کے نام پر دو لڑکیوں کو قتل کرنے والے دو ملزمان کو گرفتار کرلیا گیا۔ دونوں کمسن لڑکیوں کو مبینہ طور پر ان کی ویڈیو سامنے آنے کے بعد قتل کیا گیا تھا۔ نجی ٹی وی کے مطابق ایک لڑکی کے بھائی امین خان اور دوسری لڑکی کے والد رسول خان کو گرفتار کیا گیا ہے۔ایف آئی آر کے متن کے مطابق شام پلین کے علاقے میں 18 اور 16 سالہ لڑکیوں کو ان کے چچا زاد بھائی نے فائرنگ کر کے مبینہ طور پرغیرت کے نام پر قتل کیا۔لڑکیوں لواحقین لاشیں لے کر کے آبائی علاقے جنوبی وزیرستان منتقل ہوگئے ہیں اور واقعہ میں ملوث ملزمان کی تلاش جاری ہے۔وزیرستان پولیس کا کہنا ہے کہ واقعہ میں ملوث دیگر ملزمان کا تعین کر کے انھیں بھی جلد گرفتار کیا جائے گا۔خیال رہے کہ چند روز قبل شمالی وزیرستان کے علاقہ گڑیوم میں غیرت کے نام پر دو چچا زاد بہنوں کو قتل کردیا گیا تھا۔ لڑکیوں کو ایک نوجوان کے ساتھ ویڈیو بنانے کے الزام میں چچا زاد بھائی نے قتل کیا جس کا مقدمہ تحصیل رزمک کے تھانے میں درج ہے۔ لڑکیوں کا تعلق جنوبی وزیرستان سے بتایا جا رہا ہے۔پولیس کا کہنا ہے کہ قاتل، ویڈیو بنانے والا لڑکا اور تیسری لڑکی جو ویڈیو میں نظر آرہی ہے وہ بھی بھاگ گئی ہے ان تینوں کی تلاش جاری ہے۔پولیس حکام کا کہنا ہے کہ لڑکیوں کا تعلق جنوبی وزیرستان سے تھا اور وہ سیکیورٹی فورسز کی کارروائیوں کی وجہ سے شمالی وزیرستان کے علاقے شام پلین گڑیوم منتقل ہوئی تھیں۔ ویڈیو میں نظر آنے والے لڑکے اور لڑکیوں کے درمیان کسی قسم کے رشتے یا تعلق کی فی الحال کوئی تصدیق نہیں ہو سکی۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.