مساجد کے ساتھ ایک رویہ اور بازاروں مارکیٹوں، منڈیوں کے ساتھ دوسرا رویہ قابل تشویش ہے، ایسا لگ رہا ہے کہ کرونا کو بہانہ بناکر مذہب کو نشانہ بنایا جارہا ہے، مولانا فضل الرحمن

0

اسلام آباد: جمعیت علما اسلام کے قائد مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ مساجد کے ساتھ ایک رویہ اور بازاروں مارکیٹوں، منڈیوں کے ساتھ دوسرا رویہ قابل تشویش ہے ایسا لگ رہا ہے کہ کرونا کو بہانہ بناکر مذہب کو نشانہ بنایا جارہا ہے، پیر کے روز اپنے جاری کردہ بیان میں انہوں نے کہا کہ ہم نے پہلے دن ہی سیاست سے ہٹ کر حکومتی اقدام کی حمایت کا اعلان انسانیت کے خاطر کیاتھا ہم نے نہ صرف مدارس کو بند کیا بلکہ جمعیت کے جلسے اجلاس تک ملتوی کئے اور اپنے رضاکار خدمت کے لئے پیش کئیانہوں نے کہامساجد میں جمع الوداع کے اجتماعات ختم القرآن کی تقاریب اور عید کے اجتماعات میں احتیاطی تدابیر کو اپنایا جائے لیکن حکومت کے من پسند فیصلوں کاحکومتی رویہ مجبور کررہاہے کہ ایسا اقدام اٹھائیںمساجد کے ساتھ ایک رویہ اور بازاروں مارکیٹوں، منڈیوں کے ساتھ دوسرا رویہ قابل تشویش ہے ایسا لگ رہا ہے کہ کرونہ کو بہانہ بناکر مذہب کو نشانہ بنایا جارہا ہے مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ مساجد میں مکمل احتیاطی تدابیر بہرصورت اختیار کی جائیں انہوں نے کارکنان کو ہدایت کی کہ عید پر کارکنان اپنے گھروں تک محدود رہیں اس بار عید کی مبارک کے لئے کہیں سفر نہ کریں۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.