سپریم کورٹ نے سندھ کے علاقے میہڑ میں تہرے قتل معاملے پر مفرور ملزمان کو گرفتار کرنے کے لئے سندھ پولیس کو مزید مہلت دیدی

0

اسلام آباد (این این آئی)سپریم کورٹ نے سندھ کے علاقے میہڑ میں تہرے قتل معاملے پر مفرور ملزمان کو گرفتار کرنے کے لئے سندھ پولیس کو مزید مہلت دے دی۔جمعرات کو ڈی آئی جی حیدرآباد نعیم شیخ نے پیش رفت رپورٹ پیش کردی۔ پولیس کے مطابق اس کیس میں جو ملزمان مفرور ہیں ان کے خلاف کاروائی کررہے ہیں،ان کے ساتھ رابطے میں رہنے والے افراد کی نگرانی کی جارہی ہے، مفرور ملزمان کے شناختی کارڈ اور پاسپورٹ بلاک کردیئے گئے ہیں،ملزمان کے بینک اکاؤنٹس بھی بلاک کیے جا چکے ہیں۔ سندھ پولیس کے مطابق ملزمان کو گرفتار کرنے کے لئے خفیہ اداروں کا تعاون حاصل ہے،ملزمان بلوچستان کے بی ایریا میں روپوش ہیں۔ پولیس کے مطابق اس کیلئے ایف سی بلوچستان کی مدد درکار ہوگی۔ جسٹس عمر عطاء بندیال نے کہاکہ پولیس جو اقدامات کئے ہیں وہ دو سال پہلے ہوجانے چاہیے تھے۔ جسٹس عمر عطا ء بندیال نے کہاکہ پولیس ایسے اقدامات کرے جس سے مفرور ملزمان ذوالفقار اور غلام مرتضی چانڈیو گرفتار کئے جاسکیں، رپورٹ میں لکھا ہے کہ ملزمان بااثرقبیلے سے تعلق رکھتے ہیں،درخواست گزار ام رباب ایک بہادر لڑکی ہے اس کے سر سے بڑوں کا سایہ چھین لیا گیا۔جسٹس عمر عطا بندیال نے کہاکہ تہرے قتل ہونے کے باوجود ام رباب ثابت قدم رہی،پہلی بار لگ رہا کہ سندھ پولیس اچھا کام کررہی ہے۔ ام رباب نے کہاکہ ایک مفرور ملزم کے بارے میں سندھ پولیس کا موقف ہے کہ وہ رشتہ داروں سے رابطے میں نہیں۔ انہوںنے کہاکہ ایک مفرور ملزم کی بیوی حاملہ ہے،اگر ملزمان دو سال سے گھر نہیں آیا تو ملزم کی بیوی حاملہ کیسے ہوئی؟ ۔ جسٹس عمر عطا ء بندیال نے کہاکہ ملزمان اتنے طاقتور ہیں کہ تفتیشی افسر بھی ان سے رابطہ کرنے سے گھبراتا ہے۔ انہوںنے کہاکہ پولیس یہ تاثر دے رہی ہے کہ وہ دبائو میں ہے۔ پولیس کے مطابق ہم نے خفیہ اطلاع پر ملزمان کی گرفتاری کے پئے چھاپے مارے ہیں،جلد ملزمان کو گرفتار کرلینگے۔ جسٹس فیصل عرب نے کہاکہ آپ کو قانون اجازت دیتا ہے کہ مفرور ملزمان سے رابطے میں رھنے والوں کو پولیس گرفتار کرے۔عدالت نے کہاکہ پولیس کی جانب سے رپورٹ جمع کرائج گئی، ایس ایس پی تنویر عباس کے مطابق ملزمان بلوچستان میں روپوش ہیں، پولیس ملزمان کی گرفتاری کے ایف سی بلوچستان کی سے مدد لے سکتی ہے۔ عدالت نے کہاکہ پولیس کی اب تک کی کارکردگی میں واضح فرق نظر آیا ہے۔ بعد ازاں مزید سماعت اپریل کے آخری ہفتے تک ملتوی کر دی گئی ۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.