کمشنر نصیرآباد ڈویژن عابد سلیم قریشی کی زیرصدارت منعقد ہوا

0

۔نصیرآباد ڈویژن میں خریف سیزن کے حوالے سے ایک اعلی سطحی اجلاس کمشنر نصیرآباد ڈویژن عابد سلیم قریشی کی زیرصدارت منعقد ہوا اجلاس میں ڈپٹی کمشنرز حافظ محمد قاسم کاکڑ عبدالرزاق خجک ایف سی کے کرنل راجہ شکیل احمد ایس ای ایریگیشن ریاض بلوچ ایکسین پٹ فیڈر کینال نثار احمد مغیری ایکسین کیرتھر کینال سکندر علی زہری اسسٹنٹ کمشنر ڈیرہ اللہ یار بلال احمد ایس ڈی او کیسکو ایکسین پی ایچ ای نصیرآباد حفیظ الرحمان ہاشمی دیگر افسران شریک تھے ایس ای ایریگیشن ریاض بلوچ نے اجلاس کو پٹ فیڈر کینال اور کیرتھر کے حوالے سے تفصیل سے بریفنگ دی محکمہ ایریگیشن کی بھرپور کوشش ہے کہ مئی کے پہلے ہفتے میں پانی کی سپلائی شروع کی جائے سب سے پہلے عوام کیلئے پینے کے پانی کی فراہمی کو یقینی بنایا جائیگا انہوں نے کہاکہ اگر ٹیل کے زمینداروں اپنی فصلات کی بوائی دیر سے کریں اور ایسے بیج استعمال کریں جو اگست اور ستمبر تک کارگر ثابت ہوں تو یقینا ٹیل کے زمینداروں کے مسائل حل ہونے کے ساتھ ساتھ تمام ذرعی پانی کے مسائل پر بھی قابو پایا جاسکتا ہے انہوں نے دیگر کئی اہم امور اور درپیش مسائل سے کمشنر کو آگاہی فراہم کی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کمشنر نصیر آباد ڈویژن عابد سلیم قریشی نے کہاکہ نصیر آباد ڈویژن بلوچستان کا زرخیز علاقہ ہے جو دریائی پانی سے آباد ہوتا ہے ہماری بھرپور کوشش ہونی چاہیے کہ زرعی پانی کی منصفانہ تقسیم کے عمل کو ہر صورت یقینی بنایا جائے پانی کی چوری کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی اگر کوئی اس چوری میں ملوث پایا گیا تو بلا امتیاز کاروائی کی جائے گی اور مقدمات بھی درج کیے جائیں گے پانی چوری کے غرض سے رکھی گئی ان کی مشینری بھی ضبط کی جائے گی انہوں نے کہا کہ سرکاری املاک کو نقصان پہنچانے اور غریب کسانوں کا حق کھانے والے ملک وقوم کے وسیع تر مفاد میں نہیں ہیں زرعی پانی کی چوری میں اگر کوئی ایریگیشن کیسکو یا دیگر محکموں سے تعلق رکھنے والا سرکاری ملازم ملوث پایا گیا تو اس کے خلاف بھی سخت ایکشن لیا جائے گا جس کا ذمہ دار وہ خود ہوگا انہوں نے کہا کہ پٹ فیڈر کینال بیرون کے زمیندار دار خریف کی فصل کاشت نہ کریں کیونکہ زرعی پانی اندرون اور ٹیل تک کے زمینداروں کا حق ہے محکمہ ایریگیشن ٹیل تک کے زمینداروں کو ہرصورت پانی کی فراہمی کو یقینی بنائے پٹ فیڈر کینال کے بیرون میں رکھے گئے بجلی کے غیرقانونی ٹرانسفارمرز اور کنکشنز کیسکو جلد ازجلد منقطع کرکے ان کی مشینری ضبط کرے اور محکمہ ایریگیشن ان کے خلاف قانونی چارہ جوئی عمل میں لاتے ہوئے مختلف مقدمات درج کرائے تاکہ آئندہ کوئی بھی زرعی پانی چوری کرکے ٹیل کے زمینداروں کی حق تلفی نہ کرے انہوں نے کہا کہ کیرتھر کینال میں زرعی پانی کے غرض سے استعمال ہونے والے ٹریکٹر مافیا کے خلاف بھی بھرپور انداز میں قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی گزشتہ سال گنداخہ اور ڈیرہ اللہ یار پی ایچ ای کے تالابوں اور واٹر کورسز سے بھی پینے کا پانی زرعی مقاصد کے لیے چوری کیا گیا تھا اگر اس مرتبہ اس میں کوئی بھی ملوث پایا گیا تو ان کے خلاف بھی انتظامیہ سخت ایکشن لے گی اور محکمہ پی ایچ ای کو بھی تنبیہ کرتے ہیں کہ وہ اپنے عملے کو سختی سے ہدایت جاری کریں ہم کسی صورت عوام کے پینے کے پانی کو زرعی مقاصد میں استعمال ہونے نہیں دیں گے انہوں نے کہا کہ پٹ فیڈر کینال پر غیر قانونی واٹر کورسز بنائے گئے ہیں جن کے لیے ڈپٹی کمشنرز کی نگرانی میں کاروائی کی جائے گی اور کنٹرول رومز قائم کرکے بروقت کاروائی کو یقینی بنایا جائے گا کاروائی میں پولیس ایریگیشن اور انتظامیہ مل کر اپنے فرائض سرانجام دیں گے انہوں نے کہاکہ ذرعی پانی کی فراہمی کیلئے احتجاج کو کاروبار نہ بنایا جائے جس سے بہت سارے لوگ غیرضروری احتجاج سے متاثر ہوتے ہیں اگر کسی نے بھی غیر ضروری طور پر سندھ بلوچستان قومی شاہراہ پر احتجاج کیا تو ان کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی احتجاج کا طریقہ کار ہے اس پر عمل کیا جائے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.