سی آئی اے سے تمام روابط ختم،فلسطین نے اعلان کردیا

0

غزہ:  فلسطین نے امریکی خفیہ ایجنسی سی آئی اے سے اپنے تمام سیکیورٹی رابطے منقطع کردیے ہیں۔ فلسطین کی جانب سے اس کے ساتھ ہی یہ اعلان بھی کیا گیا ہے کہ اب سیکیورٹی کو آرڈی نیشن پر عمل درآمد کے بھی پابند نہیں ہیں۔عرب ذرائع ابلاغ کے مطابق اس بات کا اعلان فلسطینی لبریشن آرگنائیشنز (پی ایل او)کے سیکریٹری جنرل صائب عریقات نے کیا ہے۔ انہوں نے یہ بات ذرائع ابلاغ کو ویڈیو لنک کے ذریعے منعقدہ پریس کانفرنس میں بتائی۔صائب عریقات نے ذرائع ابلاغ سے کہا کہ امریکی سی آئی اے کے ساتھ قائم تمام روابط فسلطینی صدر محمود عباس کی جانب سے کی جانے والی تقریر کے ساتھ ہی ختم کردیے گئے تھے۔پی ایل او کے سیکریٹری جنرل صائب عریقات نے ویڈیو لنک کے ذریعے منعقدہ پریس کانفرنس میں کہا کہ چیزیں بہت تیزی سے تبدیل ہو رہی ہیں تو اب ہم نے بھی بدلنے کا فیصلہ کیا ہے۔فلسطینی صدر محمود عباس نے دو دن قبل امریکہ اور اسرائیل کے ساتھ دستخط شدہ تمام معاہدوں کو ختم کرنے کا اعلان کیا تھا۔انہوں نے واضح کیا تھا کہ جن معاہدوں کو ختم کیا گیا ہے ان میں اوسلو معاہدہ بھی شامل ہے جس پر 1993 میں دستخط کیے گئے تھے۔فلسطین کے صدر محمود عباس نے یہ اعلان رملہ میں بلائے گئے ایک ہنگامی اجلاس میں کیا تھا جو مغربی کنارے کے بعض علاقوں کو اسرائیل میں ضم کیے جانے کے اعلان کردہ منصوبے پرغوروخوص کے لیے طلب کیا گیا تھا۔اسرائیل میں وزیراعطم نیتن یاہو آئندہ ڈیڑھ برس کے لیے وزیراعظم بنے ہیں اور اس مقصد کے لیے انہوں نے شرکت اقتدار کا معاہدہ کیا ہے۔اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو نے اپنی انتخابی مہم میں اعلان کیا تھا کہ اگر وہ وزیراعظم منتخب ہوئے تو مغربی کنارے کے علاقوں کو اسرائیل میں ضم کردیں گے اور اسے اسرائیلی خود مختاری کی حدود میں لے آئیں گے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.