بیس فروری سے شروع ہونے والی ایچ بی ایل پی ایس ایل 2020میں شامل چھ ٹیموں کے درمیان سنسنی خیز مقابلے

0

ا سلام آباد (این این آئی)بیس فروری سے شروع ہونے والی ایچ بی ایل پی ایس ایل 2020میں شامل چھ ٹیموں کے درمیان سنسنی خیز مقابلے جاری ہیں۔دفاعی چمپئن کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے اسپنر محمد نواز نے لیگ کے پانچویں ایڈیشن  کے افتتاحی میچ کی پہلی گیند پر وکٹ حاصل کرکے تہلکہ مچادیا، جس کے بعد دنیا بھر کے شائقین کرکٹ کی نظریں ایچ بی ایل پی ایس ایل 2020 میں جاری کانٹے دار مقابلوں پر مرکوز ہیں۔ایونٹ کی آغاز سے اب تک کئی منفرد ریکارڈز لیگ کی زینت بن چکے ہیں۔ ایچ بی ایل پی ایس ایل 2020 کا پہلا ہفتہ گزرنے  کے  بعد مظہر ارشد کی جانب سے فراہم کردہ چند منفرد اعداد و شمار کے مطابق رواں سال ایچ بی ایل پی ایس ایل میں38 غیرملکی کرکٹرزشرکت کررہے ہیں۔ ایونٹ میں شریک سب سے زیادہ، 14 کھلاڑیوں کا تعلق یوکے سے ہے، جن میں جیسن رائے، معین علی اور فل سالٹ کے نام نمایاں ہیں۔ ایونٹ میں جنوبی افریقہ کے 7، ویسٹ انڈیز کے 6، آسٹریلیا کے  5، نیوزی لینڈ کے 3 جبکہ سری لنکا اور امریکہ کے ایک ایک کھلاڑی شامل ہیں۔پاکستان میں جاری ایونٹ  میں شریک نمایاں غیرملکی کھلاڑیوں میں کرس لِین، بین کٹنگ، شین واٹسن، ڈیرن سیمی، کارلوس بریتھ ویٹ، کولن منرو، لیوک رونکی اور ایلکس ہیلز اپنی اپنی ٹیموں کی نمائندگی کررہے ہیں۔ ایچ بی ایل پی ایس ایل 2020 کے افتتاحی میچ کی پہلی گیند پر کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے اسپنر محمد نواز نے اسلام آباد یونائیٹڈ کے اوپنر کولن منرو کو پویلین کی راہ دکھائی۔ گذشتہ سال لیگ کے افتتاحی میچ میں لاہور قلندرز کے اوپنر فخر زمان نے محمد سمیع کو چوکا لگا کر ایونٹ کاآغاز کیا تھا۔ اس سے قبل ایڈیشن 2017 میں بھی پہلی گیند پر وکٹ حاصل کی گئی تھی۔ایونٹ کے پانچویں ایڈیشن میں اسلام آباد یونائیٹڈکی ٹیم گروپ میچ میں لاہور قلندرز کو ایک وکٹ سے شکست دے کر کامیابی حاصل کرنے میں کامیاب رہی۔ ایچ بی ایل پی ایس ایل کی تاریخ میں یہ کسی بھی ٹیم کی جانب سے محض ایک وکٹ سے کامیابی حاصل کرنے کا دوسرا  واقعہ ہے۔اس سے قبل ایڈیشن 2017 میں لاہور قلندرز نے اسلام آباد یونائیٹڈ کو ایک وکٹ سے  شکست دے  کر فتح حاصل کی تھی۔ یہ وہی میچ تھا جب گرانٹ ایلیٹ نے  بیٹ پھینک کر جشن کا منفرد اندازاپنایا تھا۔اعداد وشمار کے مطابق ٹی ٹونٹی کرکٹ میں بہت کم میچز دیکھے  گئے ہیں جہاں کسی ٹیم نے ایک وکٹ سے کامیابی حاصل کی۔ اسلام آباد یونائیٹڈ کی رواں سال لاہور قلندرز کے خلاف ایک وکٹ سے فتح مجموعی طور پر اب تک کھیلے گئے 8804 ٹی ٹونٹی میچز میں 53ویں کامیابی ہے۔اسلام آباد یونائیٹڈ کی لاہور قلندرز کے خلاف ایک وکٹ سے فتح میں آخری وکٹ کی شراکت کا کردار اہم تھا۔ میچ میں ڈیبیو کرنے والے احمد صفی عبداللہ اور محمد موسیٰ کے درمیان 20 رنز کی ناقابل شکست شراکت قائم ہوئی۔یہ کسی بھی ٹی ٹونٹی لیگ میں آخری وکٹ کے  لیے  سب سے  بڑی شراکت ہے جبکہ مجموعی طور پر ٹی ٹونٹی کی تاریخ میں یہ آخری وکٹ کے  لیے سب سے طویل شراکت داری میں چوتھے نمبر پر ہے۔ اس سے قبل مزانسی لیگ2018 میں آخری وکٹ کے لیینونوپونگلو اور ڈوانے اولیور کے درمیان15 رنز کی شراکت قائم ہوئی تھی۔پشاور زلمی کے وکٹ کیپر بیٹسمین کامران اکمل کی جانب سے کراچی کنگز کے خلاف101 رنز کی اننگز ایچ بی ایل پی ایس ایل کی تاریخ میں مجموعی طور پر چھٹی سنچری ہے۔پشاور زلمی کے کامران اکمل کو یہ اعزاز تیسری مرتبہ حاصل ہوا ہے۔ایچ بی ایل پی ایس ایل کی تاریخ میں کامران اکمل 50  میچز کھیلنے والے پہلے کھلاڑی بن گئے ہیں۔وکٹ کیپر بیٹسمین نیرواں ہفتے  ملتان  سلطانز کے خلاف میچ کھیل کر یہ اعزاز حاصل کیا تھا۔اس کے علاوہ ڈیرن سیمی اور وہاب ریاض تاحال لیگ کے 48،48میچوں میں شرکت کرچکے ہیں،کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے سرفراز احمد اور محمد نواز 47، 47 میچز کھیل چکے ہیں۔رواں سال لیگ پاکستان کے 4 شہروں میں کھیلی جارہی ہے۔ایچ بی ایل پی ایس ایل 2020 میں ملتان اور راولپنڈی کے وینیوز کو پہلی مرتبہ لیگ میں شامل کیا گیا ہے۔ اس سے قبل لاہور اور کراچی کے علاوہ مجموعی طور پر لیگ کے میچز دبئی، شارجہ اور ابوظہبی میں کھیلے جاچکے ہیں۔ ایچ بی ایل پی ایس ایل 2020 کے ابتدائی ایک ہفتے تک موصولہ اعداد و شمار کے مطابق پہلی اننگز کا اوسط اسکور 163 ریکارڈ کیا گیا ہے، جو لیگ کے تمام ایڈیشنز میں اب تک سب سے زیادہ ہے۔ایڈیشن 2019 میں پہلی اننگز کا اوسط اسکور 157جبکہ 2018 میں 152، 2017 میں 154 اور 2016 میں148 رہا۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.